New, Insurance, Public, Government, Daily, Property, Rents

کیا آپ کا کمپیوٹر خطرے میں ہے؟

٭ سائبر حملہ دنیا کے لیے ایک انتباہ ہے: مائیکروسافٹ
٭ 99 ممالک غیرمعمولی سائبر حملے کی زد میں
یہ حملہ کس پیمانے پر کیا گیا؟
رینسم ویئر ایک ایسا پروگرام ہے جو کمپیوٹر پر موجود فائلوں تک رسائی روک دیتا ہے اور پھر بغیر تاوان ادا کیے صارف کی مشکل دور نہیں ہوتی۔ یورپی یونین کی پولیس يوروپول کے مطابق رینسم ویئر کوئی نئی چیز نہیں ہے، لیکن 'وانا كرائی' وائرس کا یہ حملہ اتنے بڑے پیمانے پر کیا گیا کہ ماضی میں اس کی مثال نہیں ملتی۔
اتوار کو یہ بتایا گیا کہ اس وائرس نے 150 ممالک میں دو لاکھ سے زیادہ کمپیوٹرز کو نشانہ بنایا ہے تاہم خدشہ یہی ہے کہ پیر کو جب لوگ دفاتر میں اپنے کمپیوٹرز کھولیں گے تو یہ تعداد بڑھ سکتی ہے۔
رینسم ویئر وائرس کی کئی اقسام ہیں اور سائبر سکیورٹی کے ماہرین کا کہنا ہے کہ اس واقعے سے انھیں بھی نئی زندگی ملتی ہوئی نظر آ رہی ہے۔
برطانیہ میں نیشنل ہیلتھ سروس کو یہ حملہ جھیلنا پڑا تھا لیکن اختتام ہفتہ پر برطانیہ میں صحت کے شعبے سے منسلک ٹرسٹ کی مشینیں دوبارہ کام کرنے لگیں تاہم این ایچ ایس نے اب تک یہ معلومات نہیں دی ہیں کہ انھیں کیسے دوبارہ کارآمد بنایا گیا۔
تاوان طلب کرنے والا یہ وائرس بنانے والے افراد کے لیے بہت زیادہ منافع بخش ثابت نہیں ہوا ہے۔
انھوں نے ہر متاثرہ مشین تک رسائی دینے کے لیے 300 بِٹ کوائنز کا مطالبہ کیا تھا اور جب بی بی سی نے ان کے ورچوئل بٹوے پر نظر ڈالی تو اس میں 30 ہزار بٹ کوائنز ہی جمع کروائے گئے تھے۔
اس کا مطلب یہ ہوا کہ زیادہ تر متاثرین نے ہیکرز کو رقم ادا نہیں کی۔


loading...